الہ آباد کی سیاسی ڈائری

تحریر: محمد سرورزاہد
حلقہ این اے 140او رپی پی 180میں اتار چڑھا ﺅ جا ری سیاست میں سینئر تجزیہ نگار سے لیکر چا ئے کی دکا ن پر سیاست کی با تیںکرنے والے حلقہ کی سیاست سے حیران ہیں انہیں تو یہ سمجھ ہی نہیں آ رہی کہ آئندہ میدان کس کے سر سجھے گا ہر پا رٹی کا امیدوار مضبو ط دکھا ئی دے رہا ہے مگر ہم با ت شروع کرتے ہیں جیتنے والو ں کی جنہو ں نے 2008میں میدان ما را جن میں پی پی 180میں احسن رضا خا ں اور این اے 140سے سردار آصف احمد علی ہیں ۔سردار آصف احمد علی جو موجو دہ دور میں وزیر تعلیم رہے لیکن حلقہ میں کو ئی کا لج تو دور کی با تانہو ں نے کہیں ہا ئی سکول بھی نہ بنوا سکے اور تو اور الہ آباد میں سوئی گیس کا افتتا ح کر نے کے بعد صرف چا رعدد جیا لو ں کے کنکشن سو ئی گیس چلوا دئے اور پورا ایک سال الہ آباد کی عوام للچا ئی آنکھو ں سے گیس کو دیکھتی رہی اور جب ایک سال بعد کنکشن شروع ہو ئے بھی تو ایک گیس میٹر کے سا تھ تین تین گیس میٹر بو گس لگ گئے جو تحقیق کر نے پر پتہ چلا کہ پیپلز پا رٹی کے کا رکنو ں کی ملی بھگت سے لگ رہے ہیں قو می اخبا رو ں میں جن کی خبریں بھی لگیں اس سے بڑھ کر اور کیا سوئی گیس میں پیپلز پا رٹی کے ورکر کر پشن کر تے کہ ایک کا نچ کی بو تلیں بنا نے والی فیکٹری مین لا ئن سے ڈا ئرکٹ کنکشن کر کے چلوا دی جس کا ما ہا نہ بل تقریبا بارہ لا کھ کے قریب بنتا ہے تو یہ کس کی آشیر با دسے ہو تا ہے سردارآصف احمد علی ایم این اے کی تو کو ن احتساب کرے گا ۔اب صوبا ئی حلقہ پی پی 180جسے مسلم لیگ (ن)کا گڑھ کہا جا تا تھا اب نہیں رہا جس کا سہرا جنا ب ایم پی اے احسن رضا خا ں کے سر پر ہے جس نے جیت تو مسلم لیگ کا رکنو ں کے کندھو ں پر بیٹھ کر حا صل کی اور جیت کے فو را بعد اپنے مخلص اور جا نثار کا رکنو ں ایسے نظر انداز کیا جیسے ان کا تعلق حلقہ پی پی 180سے تھا ہی نہیں مسلم لیگ کے ایم پی اے نے اپنے مخصوص ایجنٹ بنا لئے جنہو ں نے نہ پا رٹی کا نقصان دیکھا اور نہ پا رٹی ورکرو ں کو معاف کیا جس سے مسلم لیگ یو تھ ونگ ختم ہو کر رہ گئی ہے ایک دور تھا جب مسلم لیگ یو تھ ونگ الہ آباد کا طو طی بو لتا تھا لیکن ورکر اپنے مقا می ایم پی اے کے رویہ سے دلبرداشتہ ہو گئے اسی طرح مسلم لیگ (ن) سٹی الہ آبا دکا وجو دبھی نہ ہو نے کے برابر رہ گیا ہے اور میں میا ں نو از شریف کو یا د کروانا چا ہتا ہو ں کہ الیکشن 2008میں جب میا ں صا حب نے الہ آباد کا دورہ کیا تو رات سخت سردی میں دو بجے ہزارو ں کی تعداد میں کا رکن کھلے آسمان تلے اپنے قا ئد کی ایک جھلک دیکھنے کے لئے بیٹھے ہو ئے تھے آج وہی کا رکن مسلم لیگ (ن) سے کو سو ں دور نظر آتے ہیں اگر اب بھی کسی مرکزی رہنما کی نظر پی پی 180پر نہ پڑی تو میں بڑے وثو ق سے کہتا ہو ں کہ مسلم لیگ (ن) پی پی 180کی سیٹ کھو دے گی
مزید آنے والے وقت میں پرانے چہرو ں کے ستا ئے ہو ئے نئے امیدوار اور پچھلا الیکشن لو زکر نے والے بھی میدان میں سر گرم ہیںجس میں NA-140میں ڈا کٹر عظیم الدین زاہد لکھو ی فرزند سا بق وفا قی وزیر مو لا نا معین الدین لکھوی کا حلقہ میں جمعیت اہلحدیث کا ووٹ بنک مو جو دہے اور مزید یہ مسلم لیگ (ن) کے ٹکٹ ہو لڈر ہیں اور تقریبا پانچ سال میں لو گو ں کی خدمت اور فری دسپنسری کیمپ اسپیشل دل کے مریضو ں کے لئے دن رات ایک کئے ہو ئے ہیں ۔دوسرے الیکشن لو زکرنے والے سا بق وزیر خا رجہ خو رشید محمو دقصور ی جنہو ں نے اپنے دور حکو مت میں حلقہ کے ترقیاتی کا مو ں کے جال بچھا ادئے جن میں سو ئی گیس جو حلقہ NA -140کے لئے ان کی بہت بڑی کا وش تھی ان کا بھی حلقہ میں ووٹ بنک مو جو دہے ۔میا ں مختا راحمد جما عت اسلامی کے امیدوار ہیں اور پر امید ہیں ۔ان کے علا وہ اور بھی نئے چہرے سا منے آنے کی تو قع ہے ۔
PP-180میں سردار حسن اختر مو کل کے بیٹے سردا ر جہا نزیب حسن مو کل اپنے والد کے حلقہ احبا ب سے رابطے میں ہیں کیو نکہ ان کا اپنا ووٹ بنک حلقہ میں بہت زیا دہ ہے اور انہیں اس با راپنے والد محترم جنا ب سردار حسن اختر مو کل جو اب اس دنیا میں نہیں رہے کی ہمدردی کا ووٹ بھی ملے اور اس با رشاید حلقہ کے سب سے زیا دہ مضبوظ امیدوار کے طو رپر سا منے آسکتے ہیں ۔را نا عثمان عالم ٹکٹ ہو لڈر جب سے الیکشن ہا رے ہیں انہو ں نے حلقہ کی خدمت کو اپنا شعار بنا لیا ہے اور 24گھنٹے خود اور ان کے والد را نا حا جی محمدعالم صا حب حلقہ میں مو جو درہتے ہیں اور عوام کی خدمت میں کو ئی کثر نہ اٹھا رکھی ہے یہی وجہ ہے کہ حلقہ بھر میں ان کو اچھے لفظو ں میں یا دکیا جا رہا ہے ۔ سردار محمد امجد جو مشہور ہیں سردار آٹوز سے اور بھا ئی ہیں سردار شو کت کے اور اعلان کر چکے ہیں اسی حلقہ سے اور اسی حلقہ میں برادری کے علا وہ بھی اپنے اثر و رسو خ رکھتے ہیں ۔سردار محمد جا وید عا شق ڈو گر سا بق ایم این اے سردار عا شق ڈو گر کے بیٹے جنہو ں نے پیپلز پا رٹی کو چھو ڑ کر (ق) لیگ کے ٹکٹ پر الیکشن لڑا لیکن جیت مقدر نہ بن سکی ان کا بھی برادری ووٹ حلقہ میں بڑی تعداد میں مو جو دہے-صا بزادہ میا ں سیف اللہ عزیز گہلنوی بھی اپنا اعلان کر چکے ہیں آر گنا ئزر تحریک انصاف حلقہ پی پی 180 سے خا ن ولی خا ن بھی اعلا ن کر چکے ہیں اور نو جو انو ں کو گرما رہے ہیں ۔ایم کیو ایم سے چو ہدری الیا س خا ں طا ہر ایڈو کیٹ امیدوار ہو سکتے ہیں ۔سردار محمد اشفاق ڈوگر جو جما عت اسلامی سے PP-180سے امیدوار ہو سکتے ہیں ۔چو ہدری نو رسمند خا ں بھی PP-180سے امیدوار ہو سکتے ہیں ۔الیکشن 2002میں یو نین کو نسل تلو نڈی اور دا ﺅ کے دونو ں کو PP-180سے علیحدہ کر دیا گیا تھا جس کی پٹیشن اب معروف شخصیت شہزادہ شبیر احمد کے جا نشین شہزادہ اقبال نے لا ہور ہا ئی کورٹ میں دائر کر رکھی ہے اور وہ بھی PP-180سے امیدوار ہو سکتے ہیں اور انہیں برادری کی سپو رٹ بھی ہو گی – ۔احسان الہی ظہیر الہ آباد ی اور را نا محمد فیصل الہ آبادی بھی میدان میں اپنی قسمت آزما ئی کا فیصلہ کر چکے ہیں مگر اب تو وقت ہی بتائے گا کہ ہا رکس کا مقدر اور جیت کس کے حصہ میں ی کیو نکہ سیا سی دفتر کھلنا شروع ہو گئے ہیں ۔لیکن حلقہ کے عوام اس با رلگتا ہے کہ کچھ ایسا فیصلہ کریں گے اور ایسا چہرے سا منے لا ئیں گے جو ان سیا سی مداریو ں کے منہ پر بہت بڑا سیا سی تھپڑ ہو گا

About the author

admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>

Copyright © 2017. Powered by Paknewslive