نیٹو حملے اور پاکستان

تحریر          عقیل خان ایڈیٹر پاک نیوزلائیو

26نومبر کا دن پاکستان کے لیے ایک برادن تھا کیونکہ اس دن نیٹو فورس نے پاکستان کے فوجی جوان کو بلا وجہ گن شپ ہیلی کاپٹروں کے ذریعے فائرنگ کرکے شہید کردیا تھا جومعمول کے مطابق اپنی چوکی پر ڈیوٹی سرانجام دے رہے تھے ۔ ان کا قصور کیا تھا؟ یہ وہ سوال ہے جو نا صرف ان شہید فوجی جوانوں کے خاندان کے بلکہ ہر پاکستانی کے ذہین میں ابھر رہا ہے۔ اگر ہم حالت جنگ میں ہوتے تو پھر دیکھتے یہ امریکی ہیلی کاپٹر ان جوانوں کے نشانے سے کیسے بچ کر نکل سکتے تھے۔ہمارے جوان تو صرف اپنی ڈیوٹی کے فرائض سرانجام دے رہے تھے۔ نجانے ان امریکی دھوکا بازوں کو کیا سوجھی جو ہمارے جوانوں کو شہید کردیا ۔ یہ امریکہ اور اس کے حواریوں کا شروع دن سے مشن ہے کہ اس نے چھپ کر یا رات کے اندھیرے وار کرناہوتا ہے ان کے جوانوں میں مردانگی نہیں کہ سامنے سے آکر مقابلہ کرسکیں۔ پاکستان ایک اسلامی اور پرامن ملک ہے۔ لیکن اس نے کبھی اپنی غیر ت کا سودا نہیں کیا۔ مگرامریکہ مسلسل ہماری سرحدوں کی خلاف ورزی کررہا ہے۔ ہمارے ملک میں بیٹھ کرہمیں ہی آنکھیں دکھا رہا ہے۔ ہماری زمین کو استعمال کرکے اور ہمارے ہی لوگوں کو موت کے گھاٹ اتار رہے۔اگر ہمارے حکمران پہلے ہی دن ڈرون حملے کے جواب میں امریکہ کو آنکھیں دکھاتے تو آج ہمیں اپنے اتنے لوگوں اور فوجی جوانوں کو شہید نہ کرانے پڑتے۔ افسوس کی بات یہ ہے کہ جتنی دلیر پاکستان کی عوام اور فوج ہے اس کہیں زیادہ بزدل پاکستان کے حکمران نکلے ہیں۔ امریکہ کے دہشتگرد ریمنڈ دیوس کا واقعہ ابھی عوام بھولے نہیں ہونگے ۔دیکھا نہیں امریکہ نے کتنی دیدہ دلیری سے ریمنڈ ڈیوس کو پاکستان سے رہا کرا لیااور دوسری طرف عافیہ صدیقی ہے جوآج تک ان کی قید میں ہے اور ہمارے حکمران اس کے لیے کچھ نہیں کر پارہے۔
پاکستان میں آئے دن جو ڈرون حملے ہو رہے ہیں ان کا جواب ایک دن آرمی چیف جنرل پرویز کیانی نے دیا تھا کہ’’ حکومت آج آرڈر دے ہم امریکہ کے ڈرون طیاروں کو گرا دیںگے۔‘‘اس سے صاف ظاہر ہوتا ہے کہ پاکستان کی عوام پر امریکہ جو اتنا ظلم کررہا ہے اس میں پاکستان کے حکمرانوں کا ہاتھ شامل ہے۔ 26نومبر کے حملے کے بعد پاکستان کی دفاعی کمیٹی نے جو فیصلہ کیا ہے وہ ہر پاکستانی کے دل کی آواز ہے ۔ اورہماری دعا بھی ہے کہ اللہ تعالیٰ پاکستان کے حکمرانوں کو ایسے غیر ت مند فیصلے کرنے کی توفیق دے ۔﴿آمین﴾
نیٹو کے حملے میں ہمارے جو جوان شہید ہوگئے ہیںہمیں ان کے اہل خانہ سے دلی افسو س ہے ۔ وہ واپس تو نہیں آسکتے مگر ایک سروے کے مطابق پاکستان کی عوام اس کے بدلے میں امریکہ کو اپنے ملک کی سرحدوں سے باہر دیکھنا چاہتی ہے ۔وہ پاکستان کے گلے سے امریکہ کی غلامی کاطوق اتارنا چاہتی ہے ناکہ اس کے بدلے میں ڈالر ز لیکردیت کا ڈرامہ رچا دیں تاکہ پھر سے ان کو آزادی کا سرٹیفکیٹ مل جائے اوروہ کل پھر جھوٹ بول کر ہمارے سرحدوں پر اندھا دھند فائرنگ کرکے ہماری عوام اور فوجی جوانوں کو شہید کردے۔ اگر ہمارے حکمران ایک بار ڈٹ جائیں تو امریکہ کیا امریکہ کے بڑے بھی پاکستان کے پیروں میں پڑے ہونگیں۔ آج پاکستان کا ہر بچہ بچہ حکومت پاکستان کے اس فیصلے کی تائید کررہا ہے کہ امریکہ جیسے دھوکے باز سے جان چھڑائی جائے کیونکہ امریکہ کا جویار وہ مسلمانوں کا غدار ہے۔

About the author

admin

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

You may use these HTML tags and attributes: <a href="" title=""> <abbr title=""> <acronym title=""> <b> <blockquote cite=""> <cite> <code> <del datetime=""> <em> <i> <q cite=""> <s> <strike> <strong>

Copyright © 2017. Powered by Paknewslive