کائنات کا آخری سرا دریافت

برطانوی سائنس دانوں نے کائنات کا آخری سرا دریافت کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ برطانیہ کی یونیورسٹی آف برسٹل کے خلائی سائنس دان میری کولم بریلم نے دعویٰ کیا ہے کہ اُن کی ریسرچ ٹیم نے کائنات کا آخری سرا دریافت کر لیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ کائنات کے آخری سرے پر موجود کہکشاں ہمارے نظام شمسی سے لگ بھگ 13.1 ارب نوری سال کے فاصلے پر ہے۔ سائنس دانوں کا دعویٰ ہے کہ کہکشاں کی روشنی کو زمین تک پہنچنے میں اتنی مدت لگتی ہے جتنی کسی ستارے کے بننے کیلئے درکار ہوتی ہے جو کم وبیش دس لاکھ نوری سال سے زائد ہے۔

About the author

admin

Copyright © 2017. Powered by Paknewslive